گھوم چرخیا گھوم

سوموار پھر منہ چڑا رہا ہے۔ اٹھو اور کولہو کے بیل بن جاؤ۔ ایسے جُٹ جاؤ مادہ سمیٹنے میں کہ جیسے تمھارے اور مادے کی بھوک میں دوڑ ہو۔ دیکھو مادے کی بھوک جیتنے نہ پائے، مادہ ہاتھ سے نکل گیا تو صاحبو، ہاتھ ملتے رہ جاؤ گے۔
نہ جی نہ، یہ کیا بات ہوئی بھلا؟ مجھے ۷۰ فیصد سے زیادہ نمبر لینے ہوں گے، ورنہ ملٹی نیشنل کمپنیاں تو منہ بھی نہیں لگاتی کسی کو!۔
ارے چھوڑو بھی، کیا رکھا ہے نمبروں میں؟ اتنے نمبر گویا گدھے پر لادا بوجھ، اور پھر وہ کمپنیوں کی نوکریاں، جیسے خرید لیا ہو، ہونہہ!۔ کوشش کروں گا کہ دو ایک دن میں چچا کے ہمراہ منسٹر صاحب سے مل لوں، کیا رکھا ہے پڑھائی میں ، بس اس پھٹیچر یونیورسٹی سے چھوٹنے تو دے پیارے! بس دعا کر سال ڈیرھ یہ حکومت اور چل جائے۔ نوکری تو سفارش پر ہی ملنی ہے ناں!۔
دفع کریں صاحب، نہ ہمیں کچھ سفارش سے لینا دینا، نہ ہی ۷۰ فیصدوں سے، بس کسی طرح وہ ایمبیسی والوں کو بیس بائیس لاکھ کا بیلنس دکھانا ہے اور کیا، کینیڈا میں ڈالر کماؤ، کیا رکھا ہے یہاں؟ زندگیاں پندرہ بیس ہزار کی نوکریوں پر تھوڑی بسر ہوتی ہیں؟
شاباش بھائیو! اٹھو اور جُٹ جاؤ، کہیں کچھ ہاتھ سے جانے نہ پائے!۔
وہ سی اینڈ ڈبلیو میں میرا واقف ہے اسسٹنٹ ڈائریکٹر، بس ایسا ہو گا کہ چھ پرسنٹ اس کو اور تقریباً ساڑھے چار فیصد یہ کلرکوں اور آڈت والوں کو دینا ہے، ٹھیکہ کیا ہے؟ روزی روٹی کا بندوبست ہو جائے گا اور کیا؟
بہت ہی اعلٰی دوستو، کوشش کرو کہ کہیں سے وہ پچھلے ٹھیکے کا منافع تو برابر ہو، جو اضافی رشوت دینے کی وجہ سے ادھورا رہ گیا تھا!۔
غریبوں نے روزے رکھے تو دن ہی لمبے ہو گئے، چھوڑو جی، کیا رکھا ہے۔ ہماری باری آئی تو سرکاری نوکریوں پر ہی پابندی لگ گئی۔
اوہ بے وقوف آدمی سرکاری نوکریوں میں کیا رکھا ہے؟
یہ ہی تو میں بھی کہہ رہا ہوں ناں! سرکاری نوکریوں میں تو کچھ بھی نہیں، سارا کمال تو یہ ہے کہ کچھ بھی مت کرو، کاروبار کرو اپنا ساتھ میں، وہ "سائیڈ بزنس"!۔
کسی نے روکا تھوڑے ہی ہے تمھیں۔ حاضری ہی تو لگانی ہوتی ہے صبح صبح، دس بجے کے آس پاس!۔
رینگنے والے کیڑے نما انسانوں کی فکر بالکل بھی مت کرو بھائیو، یہ تو ہیں ہی ۔۔۔۔، ہر وقت کا چخ چخ کرتے رہتے ہیں!۔
چرخا گھوم رہا ہے دوستو! اٹھاؤ اپنا بوریا بستر اور لیٹ جاؤ اس گھومتے چرخے کے عین نیچے۔ تمھاری ہوس، لالچ، فریب اور انا کو تسکین دینے کے لیے لازم ہے کہ یہ گھومتا چرخا تمھیں کچل دے!۔

-000-

اس تحریر کو شئیر کریں
صلہ عمر سوشل میڈیا
صلہ عمر پر دوسری تحاریر